coronaخبریں 

کرونا ویکسن! کب تک مارکیٹ میں آنے کی امید

کرونا وائرس کے سنگینیت سے بے چین لوگوں میں یہ سوال اٹھ رہے ہیں کہ اس وائرس کے خلاف کوئی دوا یا  ویکسین کب آئے گی؟ لیکن کئی مہینے گزر جانے کےباوجود کوئی دوا یا ویکسین اب تک سامنے نہ آسکی۔

حالانکہ دنیا بھر کے سائنسدان مسلسل اس جد و جہد میں لگے ہوئے ہیں کہ جلد از جلد کوئی ویکسین یا دوا تیار کی جاسکے اور اس وبائی مرض کے جان لیوا حملوں سے دنیا کو بچایا جاسکے۔

مگر اندازہ یہی ہے ہے کہ کوئی بھی دوا اس سال کے آخر تک شاید ہی مارکیٹ میں آسکیں گے کیونکہ کسی دوا کی تیاری میں کم از کم ایک سال کا عرصہ تو ضرور لگتا ہے۔


تاہم کرونا کے خلاف دوا کی تیاری تک ریمڈیسیوئیر نامی دوا مریضوں کو دی جا رہی ہے۔ اور ساتھ ہی احتیاط کے ساتھ ہائیڈروکسی کلورو کوئین بھی دی جاتی ہے۔ مگر ان دواوں کاصرف اتنا ہی اثر ہے کہ مریض کے ٹھیک ہونے کا عرصہ کم ہوجاتا ہے, دراصل کووڈ 19 ایسا مرض ہے جس سے انسانی جسم خود ہیاینٹی باڈیز پیدا کرکے نجات حاصل کرتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر 2020 کے اواخر تک ویکسن تیار ہو بھی جائے تو اتنی بری مقدار میں ویکسین تیار کرنا اتنا آسان بھی نہیں ہوگا کہ دنیا کے ہر انسان دیا جا سکے۔ البتہ ایک اندازہ ہے کہ دنیا کے تقریبا 7 ارب لوگوں میں سے صرف 70%کو یہ ویکسن جا سکے گا۔